مقبوضہ کشمیر کی حقیقی تصویر دنیا کو دکھانے پرفہد شاہ کے لیے آر ایس ایف پریس فریڈم ایوارڈ


پیرس:پیرس میں قائم صحافیوں کے حقوق کے لیے کام کرنے والی عالمی تنظیم آر ایس ایف نے پریس فریڈم ایوارڈ 2020ءکا اعلان کر دیا ہے۔

پریس فریڈم ایوارڈ 2020ءکے لیے دنیا بھر کے پانچ سرکردہ صحافیوں پر مشتمل جیوری تشکیل دی گئی تھی ،جیوری میں پاکستان کے سرکردہ صحافی ،اینکر حامد میر بھی شامل تھے۔حامد میر کے علاوہ جیوری میں بھارتی صحافی رعنا ایوب ،ریپ ہال بیکی فرانس،زین ایراہم شام،ایرک کن بن تنزانیہ ،فریڈرک جرمنی اور میخائل سیگر روس شامل ہیں۔

کے پی آئی کے مطابق پریس فریڈم ایوارڈ2020ءکے لیے دنیا کے 12 سرکردہ صحافیوں میں مقبوضہ کشمیر کے نوجوان صحافی فہد شاہ بھی شامل ہیں۔ فہد شاہ کشمیر والہ ویب پورٹل کے ایڈیٹر ہیں۔آر ایس ایف فہد شاہ سمیت بارہ ممالک کے بارہ صحافیوں کو8 دسمبر کو تائی پے میں پریس فریڈم ایوارڈ سے نوازے گی۔

فہد شاہ نے مقبوضہ کشمیر میں صحافیوں کے لیے مشکل ترین حالات میں بھی کشمیر کی حقیقی تصویر دنیا کو دکھانے کی کوشش کی ہے۔ آر ایس ایف کے مطابق فہد شاہ کو دھمکیوں کا سامنا تھا جبکہ پولیس نے کئی بار حراست میں بھی لیا پولیس ان سے مسلسل تفتیش بھی کرتی رہی ہے ۔ انہیں تشدد کا بھی نشانہ بنایا گیا ۔5 اگست 2019 کو مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت کے خاتمے کے بعد لاک ڈاؤن اور مواصلاتی رابطے منقطع کر دئیے گئے تھے۔ اس کے باوجودکشمیر والہ ویب پورٹل نے اپنا کام جاری رکھا۔

آر ایس ایف کے سکریٹری جنرل کرسٹوف ڈیلﺅر نے کہا ہے کہ ، آر ایس ایف پریس فریڈم ایوارڈ ان صحافیوں کو دیا جاتا ہے جو ہمت اور بہادری سے حقائق سامنے لاتے ہیں۔پریس فریڈم ایوارڈ کے لیے نامزد ہونے والے سرکردہ صحافی شخصیات میں ایلن میلا چناروس،مارگریٹا جن جن فلپائن،محمد مسعود ایران،لے واکس جبوتی،ڈیسکلوز فرانس،مہرمان ریڈو افغانستان،سسلیااولیور برازیل،عطاءاﷲ مصر،پیٹریوجے ہنگری،لی پرنسا یورگوائے بھی شامل ہیں جبکہ کمبوڈیا جرنلسٹس الائنس کو بھی پریس فریڈم ایوارڈ 2020ءکے نامزد کیا گیا ہے۔