مقبوضہ کشمیر میں بچوں کیلئے بھارتی پالیسیاں اقوام متحدہ کے کنونشن کی خلاف ورزی ہیں،پاکستان


اسلام آباد: پاکستان نے بچوں کے عالمی دن کے موقع پر عالمی برادری کی مقبوضہ کمشیر میں بچوں کی حالت زار کی جانب فوری توجہ دلا تے ہوئے کہا ہے کہ مقبوضہ کشمیر میں بھارت کی پالیسیاں بچوں سے متعلق اقوام متحدہ کے کنونشن کی خلاف ورزی ہیں۔

ترجمان دفتر خارجہ نے بچوں کے عالمی دن کے موقع پر اپنے پیغام میں کہا کہ پاکستان بچوں کے حقوق کے فروغ اور تحفظ کو برقرار رکھنے کے لیے اپنی قومی اور بین الاقوامی ذمہ داریوں کو پورا کرنے کا پابند ہے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان نے بچوں کے استحصال اور جنس، مذہب اور نسل کی بنیاد پر ان کے ساتھ امتیازی سلوک کے خاتمے کے لئے متعدد ادارہ جاتی اور قانونی اقدامات اٹھائے ہیں۔ پاکستان بچوں کی مزدوری، جبری شادیوں اوربچوں کے خلاف تشدد کے واقعات کے خاتمے کے عزم پر قائم ہے۔ وزیراعظم عمران خان نے پسماندہ بچوں کی نشوونما کے لیے غذائیت کی کمی کو دور کرنے کے لئے احساس نشونما پروگرام کا افتتاح کیا۔ اس پروگرام کے تحت، غربت کی لکیر سے نیچے زندگی گزارنے والے خاندانوں کے بچوں کو مفت تعلیم اور وظائف فراہم کیے جاتے ہیں۔

ترجمان نے کہا کہ بچوں کے عالمی دن پر بھارتی مقبوضہ جموں وکشمیر میں بچوں کی حالت زار کو فراموش نہیں کیا جانا چاہئے۔ دنیا کی سب سے بڑی جیل مقبوضہ جموں کشمیر کے بچے عالمی برادری خصوصا اقوام متحدہ کی فوری توجہ کے مستحق ہیں عالمی برادری کوبھارت پر زور دینا چاہئے کہ وہ اپنی غیر قانونی اور غیر انسانی پالیسیوں اور طرز عمل کو فوری طور پر بندکرے