لوک ورثہ میلہ،ٹائیگر فورس کے نوجوان متوازی پولیس بن گئے


اسلام آباد: پاکستان کے وفاقی دارالحکومت اسلام آباد کے معروف تفریحی مقام شکرپڑیاں کے دامن میں لوک ورثہ میلہ میں کورونا سے تحفظ کے ضابطہ کار پر عملدرآمد نہ ہو سکا۔

دس روز جاری رہنے کے بعد میلہ اختتام پذیر ہو گیا لوک ورثہ کے وسیع میدان میں مجمعے دیکھنے میں آئے ٹائیگر فورس سے وابستہ نوجوان حفاظتی اقدامات پر توجہ دینے سے زیادہ شہریوں پر رعب دبدبہ جھاڑتے نظر آئے اور متوازی پولیس کی عکاسی کررہے تھے۔

حکومت کی طرف سے پبلک مقامات پر ہجوم پر پابندی عائد کی گئی ہے دس روز تک مختلف ثقافتی نائٹس میں کورونا سے بچائو کے ضابطہ کار کی دھجیاں بکھر جاتی رہیں وسیع میدان میں پرہجوم رقص ہوتے رہے ۔

ٹائیگر فورس کے جوان اوپن ایئر تھیٹرزکے پروگرامات میں زیادہ  نظر آئے یہ نوجوان ضلعی انتظامیہ  کے سرکاری اختیارات حاصل ہونے کا دعوی کرتے رہے ۔ضابطہ کار پر عملدرآمد سے زیادہ شہریوں سے نا مناسب طرز عمل اور رعب جھاڑتے نظر آئے دس روز تک  کثیر تعداد میں  لوگ لوک ورثہ کے میلہ  میں آتے رہے ۔

مہنگائی کی لہر کی زد میں بھی شہری نظر آئے جبکہ لوک ورثہ انتظامیہ ٹائیگر فورس کے سامنے بے بس نظر آئی ۔ ٹائیگر فورس کی طرز عمل کی  شہریوں سے شکایات سننے کو ملیں   اس نجی فورس سے وابستہ بعض  نواجوانو ں کو انتہائی بدتمیزی سے شہریوں سے پیش آتے دیکھا گیا