میں نے ترنگے کی توہین نہیں کی ،بھاجپا توہین کی مرتکب ہوئی: محبوبہ مفتی


سری نگر: مقبوضہ کشمیر میں سابق حکمران جماعت پی ڈی پی صدر اور سابق وزیر اعلی محبوبہ مفتی نے کہا ہے کہ میں نے ترنگے کی توہین نہیں کی ہے بلکہ اس کی توہین بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی)لیڈروں نے اس دن کی تھی جب انہوں نے کٹھوعہ میں ایک نو سالہ بچی کی عصمت دری کرنے والوں کے حق میں اس ترنگے کو لہرایا تھا۔

پی جے پی کے جموں و کشمیر یونٹ نے محبوبہ مفتی کے اس بیان کہ میں تب تک کوئی جھنڈا نہیں اٹھاوں گی جب تک نہ جموں وکشمیر کا جھنڈا واپس ملے گا، کو گستاخی سے تعبیر کرتے ہوئے ان کی گرفتاری کا مطالبہ کیا ہے۔محبوبہ مفتی نے اس کے ردعمل میں اپنے ایک ٹویٹ میں کہا،جھنڈا تنوع اور پرامن بقائے باہمی کا مظہر ہوتا ہے۔

مزید پڑھیں: کشمیری کل دنیا بھر میں بھارت کے غاصبانہ قبضے کے خلاف یوم سیاہ منا ئیں گے

اگر کسی نے ترنگے کی توہین کی ہے تو وہ بی جے پی ہے جو اقلیتی فرقوں کو دبا رہی ہے اور نفرت کے بیج بو رہی ہے۔ بی جے پی لیڈروں نے جھنڈے کی اس دن توہین کی تھی جب انہوں نے نو سالہ بچی کی عصت دری کرنے والوں کے حق میں اس کو لہرایا تھا