اپوزیشن کو مقابلہ کر کے دکھاؤں گا،،وزیراعظم


اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان نے ٹائیگر فورس پورٹل کا افتتاح کر دیا ہے۔

اس موقع پر تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ گزشتہ روز سرکس میں فوج کے خلاف بڑی نازیبا زبان استعمال کی گئی۔ اپوزیشن کو پہلے ہم نے بہت رعایت دے دی۔ اب میں اپوزیشن کو مقابلہ کر کے دکھاؤں گا، کسی چور، ڈاکو کا اب پروڈکشن آرڈر جاری نہیں کیا جائے گا۔ عدلیہ اور نیب سے گزارش ہے کہ روزانہ کی بنیاد پر کیسز کی سماعت کر کے انہیں نمٹایا جائے کسی کو اب وی آئی پی جیل نہیں ملے گی۔ نوازشریف کو واپس لا کر عام جیل میں رکھا جائے گا۔

وزیراعظم نے کہا کہ ٹائیگر فروس کو خوش آمدید کہتا ہوں، گزشتہ رات ہونے والی سرکس میں بڑے بڑے فنکاروں نے حصہ لیا۔ اس سرکس کی 11 سال پہلے پیش گوئی کی گئی تھی اس سرکس میں اور بھی فنکار تھے پتہ نہیں آپ کی ڈیزل پر کیوں سوئی پھنس گئی ہے۔ پہلے ہی پیش گوئی کر دی تھی کہ جب چوروں پر ہاتھ ڈالا جائے گا تو سب اکٹھے ہو جائیں گے۔

انہوں نے کہا کہ شہریوں کی رضاکار فورس کا معاشرے میں بہت بڑا مقام ہوتا ہے۔ اس نے شہریوں کے حقوق کی حفاظت کرنا ہوتی ہے۔ پاکستانی قوم مشکل وقت میں کھڑی ہو جاتی ہے۔ شوکت خانم ہسپتال بناتے وقت بہت مشکلات کا سامنا کرنا پڑا مگر پاکستانی قوم کی مدد سے ہسپتال باآسانی بن گیا۔ شوکت خانم دنیا کا واحد ہسپتال ہے جہاں 75 فیصد مریضوں کا مفت علاج ہوتا ہے۔ جب قوم کا احساس ہو جائے کہ ملک کو ان کی ضرورت ہے تو قوم کھڑی ہو جاتی ہے۔ پاکستان ماحولیاتی تبدیلی سے متاثر ہونے والے پہلے 10 ملکوں میں شامل ہے۔ دو سال کے دوران غیرمتوقع بارشوں کی وجہ سے گندم کی فصل کو نقصان پہنچا۔

انہوں نے کہا کہ آئندہ تین سال میں 10 ارب درخت لگانا ہیں۔ آئندہ ہم نے درخت لگانے کے ساتھ ساتھ دریاؤں کا پانی صاف کرنا ہے۔ ملک میں مہنگائی کی کئی وجوہات ہیں۔ روپے کی قدر میں کمی اور ڈالر کی قیمت میں اضافہ بھی مہنگائی کی وجہ ہے۔ حکومت سنبھالی تو 40 ارب ڈالر کے تجارتی خسارے کا سامنا تھا۔ کورونا وباء کی وجہ سے دنیا بھر میں اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں اضافہ ہوا۔ گندم کی کمی کا جتنا سامنا تھا اتنی گندم درآمد کر لی گئی،

وزیراعظم نے کہا کہ ٹائیگر فورس مہنگی چیزیں بیچنے والوں کی تصاویر پورٹل پر اپ لوڈ کریں۔ انتظامیہ کارروائی کرے گی۔ شریف خاندان اور زرداری دونوں کی شوگر ملیں ہیں پہلی دفعہ تفصیل سے انکوائری ہوئی ہے جس سے پتہ چلا کہ یہ اپنی مرضی کی قیمتیں بڑھاتے تھے۔ اب ہم اب پلان لے کر آ رہے ہیں کہ آئندہ چینی مہنگی نہیں ہو گی۔ رات کو سرکس میں جو دو بچوں نے تقریریں کیں ان پر میں بات نہیں کرنا چاہتا۔ ان میں سے ایک نانی بن گئی ہے مگر میرے لئے وہ بچے ہی ہیں۔ ان دو بچوں نے آج تک ایک گھنٹہ حلال کا کام نہیں کیا۔ دونوں بچے اپنے  اپنے با پ کی حرام کی کمائی پر پلے ہیں۔ لہٰذا ان پر تبصرہ کرنا فضول ہے۔ 11 کی ٹیم ہوتی ہے۔ بارھویں کو ٹویلتھ مین کہتے ہیں۔ اس پر میں کیا بات کروں۔ زندگی میں جو جدوجہد نہیں کرتا وہ لیڈر نہیں بن سکتا۔ لندن میں بیٹھ کر تقریر کرنے والے کی لندن سے پہلے والی شکل دیکھیں اور لندن والی تصویر دیکھیں۔ اس موقع پر نوازشریف کی تصاویر بھی دکھائی گئیں۔ نوازشریف نے آرمی چیف اور ڈی جی آئی ایس آئی کے خلاف جو زبان استعمال کی کسی صورت درست نہیں۔

عمران خان نے کہا کہ ہندوستان میں ایسی کبھی حکومت نہیں آئی جو مسلمانوں اور پاکستان سے اتنی نفرت کرتی ہے۔ جتنی مودی کی حکومت کرتی ہے۔ ہمارے فوجیوں پر مسلسل حملے ہو رہے ہیں۔ ہمارے فوجی ہر روز اپنی جان کی قربانیاں دے رہے ہیں۔ جمعرات کو ہمارے 20 فوجی جوانوں نے شہادت پائی، فوجی ملک و قوم کے لئے جان کی قربانیاں دے رہے ہیں مگر گیدڑ جو دم دبا کر باہر بھاگا تھا  اس نے باہر بیٹھ کر آرمی چیف اور ڈی جی آئی ایس آئی کے خلاف غلط زبان استعمال کی۔

وزیراعظم پاکستان نے کہاکہ یہ وہ نواز شریف جو آج آرمی چیف اور فوج کے خلاف غلیظ زبان استعمال کرتا ہے جنرل جیلانی کے گھر پر سریا بناتے ہوئے وزیر بنا تھا۔ یہ وہ آدمی ہے جو ضیاء الحق کے جوتے پالش کرتے کرتے وزیراعلیٰ بنا تھا۔ یہ وہ آدمی ہے جس نے اس وقت جب آئی ایس آئی چیف جنرل درانی تھے کو اس نے پیپلزپارٹی کے خلاف الیکشن لڑنے کے لئے مہران بینک سے کروڑوں روپے لئے تھے۔

؎انہوں نے کہاکہ ڈی جی آئی ایس آئی کی سپریم کورٹ کو رپورٹ تھی لیکن ہمارے ملک کی بدقسمتی کہ ہماری عدالتوں نے اس کی ہمیشہ مدد کی یہ وہ آدمی ہے جس نے آصف زرداری کو دو دفعہ جیل میں رکھا تھا اور کہتا تھا کہ یہ پاکستان کا کرپٹ ترین آدمی ہے۔ حدیبیہ پیپر مل کا کیس زرداری نے نوازشریف کے خلاف بنایا تھا جس میں نوازشریف نے اربوں روپے کرپشن کر کے باہر بھیجے تھے۔ جنرل باجوہ نے نہیں بنایا تھا۔ نوازشریف اور زرداری وہ آدمی ہیں جن پر ریمن بیکر نے کتاب لکھی تھی جس میں لکھا کہ یہ دونوں کس طرح ملک سے پیشہ چوری کر کے باہر لے گئے۔ یہ کتاب جنرل باجوہ نے نہیں ریمن بیکر نے لکھی تھی۔ اس کے علاوہ اس پر مزید تین کتابیں ہیں جس میں درج ہے کہ انہوں نے کس طرح اس ملک سے غداری کی۔ یہ وہ لوگ ہیں جو چوری کیا ہوا پیسہ بچانے کے لئے ملک کو بیچ سکتے ہیں۔ ان کا پیسہ خدا ہے۔ انہوں نے جو ملک سے کہا ہے کہ وہ میر جعفر اور میر صادق نے اپنی قوموں سے کہا تھا۔ اس نے باہر بیٹھ کر جنرل باجوہ پر نہیں پاکستانی فوج پر حملہ کیا ہے۔

وزیراعظم نے کہا کہ نریندر مودی نوازشریف کی تعریف اور آرمی چیف کو دہشت گرد کہتا تھا۔ ہندوستان کو یہ نہیں معلوم جنرل ضیاء نے نوازشریف کو گود میں بٹھا کر دودھ کی چوسنی دی تھی۔ نوازشریف وہ آدمی ہے جس نے سپریم کورٹ پر حملہ کروایا باقی عدلیہ کو بریف کیس دے کر خریدا تھا یہ وہ نوازشریف ہے جو ٹیلی فون کر کے کہتا تھا۔ جسٹس قیوم بے نظیر کو تین سال نہیں پانچ سال سزا دو۔ یہ وہ ہے جس نے پہلے نیب چیئرمین قمر زمان کو اس عہدے پر بٹھا کر اپنے کیس بند کروائے اس کے لئے عدلیہ اس وقت تک ٹھیک ہے جب تک اس کے ساتھ کھڑی ہے۔ ہم یوتھیے ہیں پاناما کا کیس جنرل باجوہ نے بنایا تھا؟ ان کا پورا خاندان جھوٹ بولتا ہے۔ خواجہ آصف سیالکوٹ کا بہت بڑا رنگ باز ہے۔ الیکشن کی رات آٹھ بجے جنرل باجوہ کو فون کر کے کہتا ہے میں الیکشن ہار رہا ہوں میری مدد کریں۔

وزیراعظم نے کہا کہ اب کسی ڈاکو کو پروڈکشن آرڈر نہیں ملے گا۔ شہباز شریف کا 23 ارب روپے کی کرپشن کا انکشاف ہوا ہے جب تک یہ عدالتوں کو صحیح طور پر جواب نہیں دے گا اس کو کوئی رعایت نہیں ملے گی۔ میں عدلیہ اور نیب کو پیغام دینا چاہتا ہوں کہ لوگ انصاف کا انتظار کر رہے ہیں۔ لوگ چاہتے ہیں ان چوروں سے لوٹا ہوا پیسہ واپس ہو۔ میری چیف جسٹس سے درخواست ہے کہ آپ کو حکومت سے جو بھی مدد چاہئے ہم دینے کے لئے تیار ہیں لیکن خدا کے واسطے روزانہ کی بنیاد پر سماعت کر کے یہ کیسز ختم کریں۔ یہ 30 سال سے ملک کو لوٹ رہے ہیں۔ میں نیب سے کہتا ہوں کہ خدا کے لئے کیسز کو منطقی انجام تک پہنچایا جائے۔

انہوں نے کہا کہ گیدڑ نے جو گزشتہ زبان استعمال کی ہے اب نیا عمران خان ابھرے گا۔ ان کو اب وی آئی پی جیل نہیں ملیں گے عام قیدیوں کی طرح رکھا جائے گا۔ گزشتہ روز کی سرکس کو میرا پیغام ہے کہ عمران خان نے 20 سال کھیلوں کے میدانوں میں مقابلہ کیا ہے اور بائیس سال سیاسی جدوجہد کی ہے سرکس والو! اب میں آپ کو مقابلہ کر کے دکھاؤں گا۔ نیب اور عدالتیں آزاد، خودمختار ہیں لیکن میرے نیچے جو ادارے ہیں ان کو میں  اب خود تیار کروں گا اور پیسہ لوٹ کر باہر لے جانے والوں کو ایک ایک کر کے پکڑیں گے۔

وزیراعظم نے کہاکہ نوازشریف عدالتوں اور فوج میں انتشار پھیلانے کی کوشش کر رہا ہے اور باہر کی پاکستان مخالف قوتوں میں نمایاں ہونے کی کوشش کر رہا ہے۔ یہ امریکہ میں اسرائیل اور ہندوستان کی لابی کو اپیل کر رہا ہے اس کی گیم میں سمجھتا ہوں میں اس کو یہ بتانا چاہتا ہوں کہ جو بھی آرمی چیف اور آئی ایس آئی چیف ہو مجھے اس سے کوئی فرق نہیں پڑتا کیونکہ میں تو کوئی چوری نہیں کر رہا اور میری باہر کوئی جائیداد نہیں ہے مجھے کسی سے کوئی خوف نہیں ہے۔ جنرل باجوہ نے جس طرح مشکل وقت میں اس حکومت کی مدد کی۔ فوج نے کورونا اور سیلاب میں ہماری مدد کی۔ فوج نے ہر مشکل میں ہمارا ساتھ دیا اور پیسہ نہ ہونے کی وجہ سے اپنے دفاعی اخراجات کو کم کیا۔

وزیراعظم نے دھمکی آمیزلہجے میں منہ پر ہاتھ پھیرتے ہوئے کہاکہ  نوازشریف سن لو اب یہ میری پوری کوشش ہے تمہیں ملک میں واپس لایا جائے اور تمہیں لا کر عام جیل میں ڈالیں گے اب تمہارے لئے وی آئی پی جیل نہیں ہو گی۔ تم واپس آؤ دیکھتے ہیں تمہیں کہاں رکھتے ہیں۔