کشمیری صداقت ، حق خودارادیت کے اصول پر مبنی حل ہی قبول کریں گے، ڈاکٹر غلام نبی فائی


واشنگٹن: ورلڈ کشمیر ایویئر نیس فورم کے سیکریٹری جنرل ڈاکٹر غلام نبی فائی نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی سے پاکستان کے وزیر اعظم عمران خان کے خطاب کی تعریف کی ہے۔

ڈاکٹر غلام نبی فائی نے واشنگٹن میں جاری ایک بیان میں کہا کہ وزیر اعظم عمران خان کی اقوام متحدہ سے یہ اپیل کہ وہ بھارت کو تنازعہ جموںوکشمیر اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قراردادوں اور کشمیری عوام کی خواہشات کے مطابق حل کرنے پرآمادہ کرے، کشمیری عوام کی امنگوں کی حقیقی عکاسی ہے۔

کے پی آئی کے مطابق انہوں نے کہا کہ کشمیری عوام نے یہ واضح کر دیا ہے کہ کوئی بھی حل اس وقت تک قابل قبول نہیں ہوگا جب تک کہ وہ صداقت اور حق خودارادیت کے اصول پر مبنی نہ ہو۔

غلام نبی فائی نے کہا کہ اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے 75 ویں اجلاس سے وزیر اعظم عمران خان کا خطاب حقیقی اعداد و شمار پر مبنی تھا۔انہوں نے کہاکہ ماضی میں صدر نیلسن منڈیلا ، صدر پیوٹن اورصدر بل کلنٹن سمیت دیگر عالمی رہنماںنے بھی عالمی طاقتوں کوتنازعہ کشمیر حل نہ کرنے کے نتائج سے خبردارکیاہے۔

مزید پڑھیں: ڈاکٹر غلام نبی فائی کا مسئلہ کشمیر کے حل کےلئے عالمی طاقتوں سے مداخلت کا مطالبہ

صدر بل کلنٹن نے کہا تھاکہ کشمیر کرہ ارض پر سب سے خطرناک مقام ہے۔ صدر پیوٹن نی3دسمبر2004 کوکہا تھا کہ بھارت اور پاکستان کو جنوبی ایشیا اور باقی دنیا میں امن کے مفاد کے لئے مسئلہ کشمیر کو حل کرنا چاہئے۔