مقبوضہ کشمیر کے حالات پر بھارتی پروپیگنڈہ دنیاکے سامنے بے نقاب ہو گیا،الطاف بٹ


اسلام آباد:چیئرمین جموں و کشمیر سالویشن موومنٹ الطاف احمد بٹ نے مقبوضہ جموں و کشمیر میں انسانی حقوق کی مسلسل خلاف ورزیوں سے متعلق اقوام متحدہ کے ہائی کمشنر کے بیان کو سراہا ہے۔

اقوام متحدہ کے ہائی کمشنر نے یہ ذکر کیا کہ ہندوستان کے زیرانتظام کشمیر میں عام شہریوں کے خلاف فوجی اور پولیس کے تشدد سمیٹ ایسے واقعات جاری ہیں جس میں پیلٹ گنوں کا استعمال بھی شامل ہے ، نئے ڈومیسائل کے قوا نینِ سمیت متعدد قانونی تبدیلیاں گہری بے چینی پیدا کررہی ہیں ، جبکہ زرائع ابلاغ سمیت سیاسی بحث و مباحثے اور عوامی شرکت کے لئے نئے قواعد کے بعد سے اسے منقطع اور محدود کردیا گیاہے۔

سینکڑوں افراد اب بھی صوابدیدی نظربند ہیں جبکہ پورے علاقے میں انٹرنیٹ رابطے کو مکمل طور پر بحال نہیں کیا گیا ہے۔چیئرمین جموں کشمیر سالویشن موومنٹ الطاف بٹ نے مزید کہا کہ مقبوضہ جموں و کشمیر میں حالات معمول کے بارے میں ہندوستانی پروپیگنڈہ ، جھوٹ اور جعلی خبریں اب دنیا کے سامنے بے نقاب ہوگئیں۔ مقبوضہ جموں و کشمیر جڑواں لاک ڈاون کی لپیٹ میں ہیں اور ہندوستان میں مودی کی قیادت میں حکومت نے کشمیر کو 408 دن سے مفلوج کرکھا ہے۔

دنیا اب اس حقیقت سے بخوبی واقف ہے کہ کشمیر جل رہا ہے اور مودی اور اسکے غنڈے جنوبی ایشیا کے امن کے لئے خطرہ بن چکے ہیں۔انہوں نے مزید کہا کہ مودی ، امیت شاہ ، اور اجیت ڈوول نے خطے کی آبادی کو تبدیل کرنے کے لئے کورونا وائرس کی وبا کے دوران غیرقانونی ڈومیسائل قانون متعارف کرایا اور 3 ماہ کے اندر اندر 15 لاکھ سے زیادہ ڈومیسائل بیرونی لوگوں کو جاری کردیئے گئے ہیں۔ یہ غیر قانونی ڈومیسائل قانون جو بین الاقوامی قانون اور اقوام متحدہ کی قرار دادوں کی خلاف ورزی کر رہا ہے اگر اسے روکا نہیں گیا تو مقبوضہ جموں و کشمیر کی آبادکاری کو چند سالوں میں مکمل طور پر تبدیل کردیا جائے گا۔چ

یئرمین جموں و کشمیر سالویشن موومنٹ الطاف احمد بٹ نے اعدادوشمار کے حوالے سے بتایا ہے کہ ، گذشتہ 408 دنوں میں بھارتی سفاک فورسز نے 237 کشمیریوں کو نشانہ بنایا ، 1400 افراد کو شدید زخمی کیا ، 14000 شہری گرفتار ہیں جبکہ 946 کے قریب گھر تباہی جبکہ سینکٹروں خواتین کی عصمت دری کی گئی ہیں۔مسئلہ کشمیر اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے ایجنڈے پر قائم ہے اور اس پر قائم رہنا ہے ، یہ ایک بین الاقوامی تنازعہ ہے جسے اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق حل کیا جانا چاہئے۔ جنوبی ایشیا کے امن اور استحکام کے لئے کشمیر میں امن کی ضرورت ہے ،

جو ایٹمی فلیش پوائنٹ ہے۔ عالمی طاقتوں اور بین الاقوامی تنظیموں کو حقیقت کو دیکھنا چاہئے اور مودی کو ایٹمی جنگ شروع کرنے اور پورے جنوبی ایشیا کے امن و استحکام کو خطرے میں ڈالنے سے روکنا چاہئے۔علاوہ ازیں الطاف احمد بٹ نے تحریک حریت کے سیکرٹری جزل امیر حمزہ کی اہلیہ محترمہ کی وفات پر اظہار افسوس کرتے ہوئے مرحومہ کے درجات کی بلندی اور پسماندگان کیلیے صبر جمیل کی دعا کی ، اپنے تعزیتی بیان میں انہوں نے کہا کہ امیر حمزہ جو کہ خود ان دنوں پس دیوار زنداں ہیں بھارتی ظلم و جبر کا شکار ہیں ان کے پس دیوار زنداں ہوتے ہیں ان کی زوجہ محترمہ کی وفات یقینا امیر حمزہ اور ان کے سارے خاندان کیلیے ناقابل برداشت صدمہ ہے امیر حمزہ کے صبر و استقامت اور آزادی کیلیے بے مثال جدوجہد اور لازوال قربانیوں پر انہیں سلام پیش کرتے ہیں الطاف احمد بٹ نے دعا کی کہ اللہ تعالی مرحومہ کو جنت الفردوس میں اعلی مقام عطا کرے اور جملہ پسماندگان کو یہ صدمہ برداشت کرنے کی توفیق دے امین۔