اسرائیل کے ساتھ تعلقات غداری اورخیانت ہے،عالمی علما اتحاد


استنبول:بین الاقوامی علما اتحاد کے سیکرٹری جنرل اورممتاز عالم دین علی محی الدین القرہ داغی نے کہا ہے کہ قابض اسرائیلی ریاست کے ساتھ دوستانہ تعلقات استوار کرنا بین الاقوامی معیارت، قومی، انسانی اور دینی اصولوں کے اعتبار سے غداری اور بہت بڑی خیانت ہے۔

مرکز اطلاعات فلسطین کے مطابق مائیکرو بلاگنگ ویب سائٹ’ ٹویٹر’ پر پوسٹ کردہ ایک بیان میں انہوںنے کہا کہ بحرین کے اسرائیل کو تسلیم کرکے مسلم امہ، عرب اقوام اور فلسطینی قوم کے ساتھ خیانت کی ہے۔انہوں نے استفسار کیا کہ ایک انسان اپنے حق سے کیسے دست بردار ہوسکتا ہے۔ فلسطینی قوم کا حق پوری مسلم امہ کا حق ہے اور کسی ایک ملک کے لیے یہ جائز نہیں کہ وہ اپنی مفادات کے لیے پوری مسلم امہ کے حقوق کو پامال کرتا پھرے۔

مزید پڑھیں:اسرائیل کے ناجائز تسلط کے خاتمے تک امن کاقیام ممکن نہیں،اردن

اسرائیل سے دوستی ہمارے قبلہ اول، رسول اللہ کے مقام معراج، عمر فاروق کے آزاد کردہ بیت المقدس اور صلیبیوں کے خلاف قربانیاں دینے والے مجاھدین اور صلاح الدین ایوبی کی روح کے ساتھ خیانت اور دھوکہ ہے۔علامہ القرہ داغی کا کہنا تھا کہ زندہ ضمیر مسلمانوں کو تمام تر وسائل اور امکانات کو استعمال کرتے ہوئے صہیونی ریاست کے ساتھ دوستانہ مراسم کے قیام کی راہ روکنا ہوگی۔