سید علی گیلانی ایک تاریخ ساز شخصیت تھے،راجہ فہیم کیانی


سٹوک آن ٹرنٹ(صباح نیوز) تحریک کشمیر برطانیہ کے صدر راجہ فہیم کیانی نے کہا ہے  شہید اعظم سید علی گیلانی ایک تاریخ ساز  شخصیت تھے. ایے عظیم لیڈر بار بار پیدا نہیں ہوتے ہیں. وہ صرف کشمیریوں کے لیڈر نہیں بلکہ پوری امت مسلمہ کا دکھ درد محسوس کرتے تھے ۔

تحریک آزادی کشمیر کے لیے ان کی لازوال جدو جہد تھی۔ انہوں نے شیخ عبداللہ جیسے بھارت نواز لیڈروں کو بھی للکارا  تھا۔ سٹوک آن ٹرینٹ  میں سید علی گیلانی کی یاد میں منعقدہ   ایک تعزیتی ریفرنس سے خطاب کرتے ہوئے   انہوں نے کہا کہ شبیر شاہ، یاسین ملک، میر وعظ عمر فاروق، ڈاکٹر فیاض، آسیہ اندرابی مسرت عالم بٹ جیسے کشمیری رہنما بھارتی زندان میں ہیں  علی گیلانی نے ان کی  بھی رہنمائی کی تھی۔

بھارتی حکومت نے  سید علی گیلانی کی وفات کے بعد ان کی میت  کے ساتھ جو توہین آمیز سلوک کیا  دنیا بھر میں اس کی مذمت کی گی۔  ریفرنس کی صدارت ممتاز عالم دین  جمعیت علماء جموں و کشمیر برطانیہ کے جنرل سکریٹری اور کل  جماعتی  کشمیر رابطہ کے سابق صدر مولانا محمد الطاف نے کی۔

تحریک کشمیر یورپ کے صدر محمد غالب نے کہا کہ بھارت نے  سید علی گیلانی کی میٹ کو  پاکستانی پرچم  میں لپیٹنے پر  ان کی فیملی پر مقدمہ درج کر دیا تھا۔ دنیا کو ایسے ملک کو جمہوری ملک کہتے ہوئے شرم آنی جائے چاہئے۔  مودی جیسے دہشتگرد پر یورپ اور امریکہ میں داخلے پر  پابندی تھی، ایسے انسانیت کے قاتلوں کو گلے لگایا جائے گا تو دہشتگردوں کی حوصلہ افزائی ہوگی ۔

دنیا  میںامن کی بجائے تباہی اور بربادی ہوگی۔ مولانا محمد الطاف نے کہا ہے سید علی گیلانی کی   زندگی کا بیشتر حصہ جیلوں میں  گزرا ۔ آخری  بارہ سال گھر میں نظر بند رہے مگر انہوں نے مشکل اور سنگین ترین حالات کے باوجود  اپنے اصولی موقف سے دستبردار نہیں ہوئے ، دیگر سیاسی اور سماجی رہنمائوں  خواجہ محمد سلیمان،  سابق میئر  کونسلر ماجد، نوید مغل اور کمیونٹی کے سرکردہ ر رہنماوں   شہید اعظم سید  اعلیٰ گیلانی کو ان کی خدمات پر زبردست خراج عقیدت  پیش کیا، اجلاس میں تحریک کشمیر یورپ کے ڈپٹی جنرل سکریٹری فرید الدین لودی، فیصل السلام، ریاض بہار بھی موجود تھے۔ تعزیتی ریفرنس کا آغاز حافظ محمد حبیب کی تلاوت قران پاک سے کیا گیا مولانا محمد الطاف نے دعا کی۔