وزیراعظم کی متعلقہ حکام کو اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں کمی کی ہدایات

انٹرنیٹ فوٹو

اسلام آباد:وزیر اعظم عمران خان کی زیر صدارت اشیائے ضروریہ کی قیمتوں کے حوالے سے بنی گالا میں جائزہ اجلاس ہوا، وزیر اعظم نے چیف سیکرٹریز کو اشیائے ضروریہ کی قیمتوں کا مناسب تعین اور اس قیمت کا اطلاق ہر صورت یقینی بنانے کی ہدایات کریں۔

وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت بنی گالہ میں اہم اجلاس ہوا، جس میں ملک میں مہنگائی کی صورتحال اور صوبوں میں پرائس کنٹرول کے حوالے سے اقدامات کا جائزہ لیا گیا۔اجلاس میں وزیر خزانہ شوکت ترین، وزیر صنعت و پیداوار مخدوم خسرو بختیار، مشیر برائے احتساب مرزا شہزاد اکبر، معاون خصوصی برائے سماجی تحفظ ڈاکٹر ثانیہ نشتر اور سینئر افسران نے شرکت کی جب کہ چیف سیکرٹری پنجاب اور خیبر پختونخوا ویڈیو لنک کے ذریعے اجلاس میں شریک ہوئے۔

اجلاس میں وزیر خزانہ شوکت ترین ، وزیر صنعت و پیداوار مخدوم خسرو بختیار؛ مشیر برائے احتساب مرزا شہزاد اکبر، معاون خصوصی برائے سماجی تحفظ ڈاکٹر ثانیہ نشتر اور سینئر افسران نے شرکت کی  جب کہ چیف سیکرٹری پنجاب اور خیبر پختونخوا ویڈیو لنک کے ذریعے اجلاس میں شریک ہوئے۔اجلاس میں چینی کی قیمت میں خاطر خوا کمی کو یقینی بنانے کے لیے 30 نومبر 2021 تک سیلز ٹیکس کے نفاذ کو واپس ایکس مل قیمت پر لے جانے کا فیصلہ کیا گیا، وزارت صنعت اور وزارت خزانہ کومستقبل کی چینی کی ضروریات کا تعین اور درآمد کے حوالے سے ضروریات کا جائزہ لینے کے احکامات دیے گئے

۔وزیر اعظم نے چیف سیکریٹریز کو اشیائے ضروریہ کی قیمتوں کا مناسب تعین اور اس قیمت کا اطلاق ہر صورت یقینی بنانے کی ہدایات بھی دیں۔ اجلاس میں تعین شدہ قیمتوں پر عمل درآمد کو یقینی بنانے میں غفلت کے مرتکب افسران کے خلاف کاروائی کا فیصلہ بھی کیا گیا۔ اجلاس میں خوردنی تیل کی مناسب قیمتوں کے تعین کے حوالے سے نظام تشکیل دینے کا فیصلہ کیا گیا جب کہ وزیرِ اعظم نے اشیائے ضروریہ کے ڈیٹا شئیرنگ کے حوالے سے قانون کو جلد از جلد حتمی شکل دینے کی ہدایت دی