ترقی پذیر ملکوں تک کورونا ویکسین کی رسائی بڑھانے کی ضرورت ہے، وزیر خارجہ

انٹرنیٹ فوٹو

اسلام آباد: وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ ترقی پذیر ملکوں تک کورونا ویکسین کی رسائی بڑھانے کی ضرورت ہے ۔ کورونا کا مقابلہ کرنے کے لیے ترقی پذیر ملکوں کو درکار وسائل کے لیے بھی عالمی تعاون کی ضرورت ہے ۔ کورونا کا  مقابلہ کرنے کے لیے رکن ملکوں کو ایک دوسرے کے تجربات سے استفادہ کرنا چاہیے.

ایشیاء پیسیفک بی آر آئی کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ترقی یافتہ ملکوں کو ترقی پذیر ملکوں کے لیے شرح سود اور آسان شرائط پر قرضوں کی سہولت دینی چاہیے ۔ وزیر خارجہ نے کہا کہ پاکستان میں کورونا کے دوران ایک کروڑ 50 لاکھ گھرانوں کو براہ راست نقد مالی امداد پہنچائی گئی ۔ حکومت پاکستان نے غریب گھرانوں کو 203 ارب روپے نقد امداد فراہم کی ۔

چین نے ایک بار پھر مشکل حالات میں آگے بڑھ کر پاکستان کی بھرپور معاونت کی ۔ بھرپور تعاون پر پاکستان کی  حکومت اور عوام اپنے عظیم دوست ملک چین کے شکر گزار ہیں ۔ پاکستان نے مشکل حالات کے باوجود سر پسند شاداب اقتصادی مہم شروع کی سر بلند اقتصادی مہم کے تحت 85 ہزار اضافی روزگار کے مواقع پیدا کئے گئے ۔

ماحولیاتی تحفظ کے تحت خیبر پختونخوا میں 8 لاکھ ایکڑ سے زائد بنجر اراضی کو قابل کاشت بنایا گیا ۔ ساحلی علاقوں میں مینگروز کے رقبے میں  نمایاں اضافہ کیا گیا ۔