پنجاب یونیورسٹی میں شراب فروشی کی مذمت کرتے ہیں،ناظم جمعیت جامعہ پنجاب عبدالقادر آفریدی


لاہور:ناظم  اسلامی جمعیت طلبا جامعہ پنجاب عبدالقادر آفریدی نے پنجاب یونیورسٹی میں شراب فروشی کے واقعات کی مذمت کرتے ہوئے مطالبہ کیا ہے کہ ان سرگرمیوں میں ملوث عناصر کو فی الفور گرفتار کیا جائے۔

اسلامی جمعیت طلبہ کی جانب سے جاری بیان کے مطابق  پنجاب یونیورسٹی میں سر عام شراب فروشی کا دھندہ عروج پر پہنچ چکا  ہے.یونیورسٹی گارڈز نے ہاسٹلز گیٹ پر جنڈر سٹڈیز ڈیپارٹمنٹ کے طالب علم کیلئے شراب لیجاتے ہوئے ایک مسیحی لڑکے کو گرفتار کرلیا ہے جبکہ خیام خان نامی طالب علم کیخلاف ایف آئی آر بھی درج ہوچکی ہے۔ اس خبر پر پردہ ڈالنے کیلئے معاملے کو لڑکی سے جوڑنے کی کوشش کی گئی۔

بیان کے مطابق یونیورسٹی میں غل غپاڑہ کرنے والی چار لڑکیوں اور دو لڑکوں کو بھی گارڈز نے حراست میں لیا ، ان کے داخلے منسوخ کرکے بچوں کی حرکتوں سے متعلق ان کے والدین کو بھی باخبر کردیا گیا۔ یہ دونوں واقعات پیر کو تین سے پانچ بجے کے درمیان پیش آئے۔

اظم جامعہ پنجاب اسلامی جمعیت طلبا عبدالقادر آفریدی نے کہا ہے کہ جامعات میں تعلیمی و تدریسی عمل کو تباہ کرنے کی کوشش کسی صورت بھی پایہ تکمیل تک نہیں پہنچنے دیں گے ۔ اسلامی جمعیت طلبہ اس سازش کو کسی صورت بھی پورا نہیں ہونے دے گی اور
اس میں شامل عناصر کے خلاف قانونی کارروائی کی جائے اور فوراً گرفتار کیا جائے