افغانستان میں امن پاکستان اورخطے کے دیگرممالک کی معاشی ترقی کیلئے ناگزیرہے:شاہ محمود قریشی


اسلام آباد:وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ افغانستان میں امن پاکستان اور خطے کے دیگر ممالک کی معاشی ترقی کیلئے ناگزیر ہے۔امریکی ایوان نمائندگان کی خارجہ امور کمیٹی کے چیئرمین گریگوری میکس سے ویڈیو لنک پر گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ پاکستان افغانستان سمیت خطے میں امن کا خواہاں ہے۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ خطے میں امن سے متعلق پاکستان اور امریکہ کے خیالات ایک جیسے ہیں، انہوں نے کہا کہ علاقائی روابط میں اضافے کیلئے امن ناگزیر ہے، انہوں نے کہا کہ پاکستان کی توجہ جغرافیائی، معاشی ترجیحات پر مرکوز ہے۔

شاہ محمود قریشی نے کہا کہ جنوبی ایشیا کے خطے میں امن کیلئے پاکستان اور امریکہ کے درمیان تعاون اہم ہے۔نیویارک میں اقوامِ متحدہ جنرل اسمبلی کے ہنگامی اجلاس کے موقع پر میرے امریکی ممبران پارلیمنٹ سے رابطے انتہائی سودمند رہے۔ میں نے انہیں اہم علاقائی اور عالمی امور کے حوالے سے پاکستان کے موقف سے آگاہ کیا۔ ۔ دونوں رہنماوں کے درمیان ٹیلی فونک گفتگو میں پاکستان اور امریکا کے مابین دو طرفہ تعلقات، اسلاموفوبیا کے بڑھتے ہوئے رجحان اور اہم علاقائی وعالمی امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

وزیر خارجہ نے امریکی ایوان نمائندگان کی قائمہ کمیٹی برائے امور خارجہ کے چیئرمین کو دنیا بھر میں اسلاموفوبیا کے بڑھتے ہوئے رجحان پر پاکستان کی تشویش سے آگاہ کیا۔انہوں نے کہا کہ پاکستان، اقوام متحدہ سمیت مختلف عالمی فورمز پر، نفرت آمیز بیانیے اور اسلاموفوبیا کے بڑھتے ہوئے رجحان کے خلاف مسلسل آواز اٹھا رہا ہے۔ اسلاموفوبیا کے تدارک اور “پرامن بقائے باہمی” کو یقینی بنانے کیلئے عالمی برادری کو مشترکہ اقدامات اٹھانا ہوں گے۔چیئرمین امریکی پارلیمنٹ فارن افیرز کمیٹی نے کہا کہ پاکستان خطے کا اہم ملک ہے۔ خطے میں امن و استحکام کیلئے پاکستان کی کوششیں قابل تعریف ہیں۔ انہوں نے کینیڈا میں مقیم پاکستانی فیملی کے ساتھ پیش آنے والے المناک واقعے اور چار معصوم شہریوں کی ہلاکت پر وزیر خارجہ کیساتھ اظہار تعزیت کیا۔