سراج الحق کی اسرائیلی جارحیت کے خلاف جمعہ 21 مئی کو قوم سے احتجاجی مظاہروں کی اپیل


دیر:امیر جماعت اسلامی پاکستان سراج الحق نے کہا ہے کہ اسرائیل کے بے رحمانہ اور انسانیت سوزمظالم ناقابل قبول ہیں۔فلسطین ایشو پر غیروں سے زیادہ اپنوں نے نقصان پہنچایا ہے۔

امیر جماعت نے کہا کہ قائدِ اعظم محمد علی جناح ہمیشہ فلسطین کی آزادی کے لیے آواز اٹھاتے رہےـ فلسطین کے جو حالات آج ہیں وہ قائد کے عہد میں بھی موجود تھے لیکن قائد اعظم نے اس درد کو جس کرب کے ساتھ محسوس کیا آج ہم اس کے احساس سے ہی محروم ہوگئے ہیں اور یہی ہماری اصل ناکامی ہے۔قائد اعظم نے فلسطین میں اسرائیل کے قیام کی ہر طرح سے مخالفت کی تھی آج بھی ہماری حکومت کو قائد اعظم کی پالیسی پر عمل در آمد کی ضرورت ہے۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے دیر میں مختلف وفود اور ذمہ داران سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔سراج الحق نے اسرائیلی جارحیت کے خلاف جمعہ 21 مئی ملک بھر میں قوم سے احتجاجی مظاہروں کی اپیل کرتے ہوئے کہا کہ فلسطین میں روزانہ انسانی المیہ جنم لے رہا ہے لیکن اقوام متحدہ اور انسانی حقوق کے امریکی ویورپی علمبردار بہرے اور گونگے بنے ہوئے ہیں۔ دنیا بھر میں مسلمانوں پر ہونے والا ظلم ان کو نظر آتا ہے نہ ہی بچوں اور عورتوں کی سسکیاں ان کو سنائی دیتی ہیں۔فلسطین پر ہونے والے حملے تاریخ کی بد ترین دہشت گردی ہے۔

امیر جماعت نے کہا کہ امت مسلمہ کو مظلوم فلسطینی قوم کے ساتھ کھڑے ہو جانا چاہیے۔مسلم حکمران بیانات اور ٹویٹ سے آگے بڑھ کر غزہ کے شہریوں کی جان و مال عزت اور آبرو کے تحفظ کے لیے لائحہ عمل مرتب کریں۔سراج الحق نے کہا کہ فلسطین کے حوالے سے پوری قوم ایک پیج پر ہے، پاکستان فلسطین کے حوالے سے موجودہ حالات میں خود لیڈ کرے۔ او آئی سی کے اجلاس میں واضح اور دو ٹوک موقف اپنایا جائے۔

انہوں نے کہا کہ فلسطینیوں پر ظلم کے خلاف جماعت اسلامی کے پلیٹ فارم پر ملک بھر میں احتجاجی مظاہرے ہونگے جس میں عوام بھر پور شریک ہو کر پوری دنیا کو ایک پیغام دیں۔امیر جماعت اسلامی سراج الحق 21 مئی بروز جمعہ اسلام آباد میں ایک بڑے احتجاجی مظاہرے کی قیادت کریں گے۔