معروف فنکار و مزاح نگار فاروق قیصر عرف انکل سرگم انتقال کر گئے،صدر،وزیراعظم کااظہارتعزیت


اسلام آباد: معروف فنکار و مزاح نگار فاروق قیصر عرف انکل سرگم حرکت قلب بند ہونے سے 75 برس کی عمر میں انتقال کر گئے۔

فاروق قیصر کے اہلخانہ نے ان کی موت کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ معروف مزاح نگار کا انتقال گذشتہ روز حرکت قلب بند ہونے کی وجہ سے ہوا۔ان کے پوتے حسنین فاروق قیصر نے بتایا کہ قیصر اقبال کافی عرصے سے دل کے عارضے میں مبتلا تھے،جمعہ کو طبیعت خراب ہونے پر انہیں ہسپتال لے جایا گیا لیکن وہ جانبر نہ ہو سکے اور خالق حقیقی سے جا ملے۔

فاروق قیصر نے سوگواروں میں ایک بیٹا اور دو بیٹیاں چھوڑی ہیں۔فاروق قیصر 31 اکتوبر 1945 کو لاہور میں پیدا ہوئے اور نیشنل کالج آف آرٹس سے تعلیم حاصل کی۔وہ کالم نگار، ڈائریکٹر، کٹھ پتلی ساز، اسکرپٹ رائٹر اور وائس ایکٹر بھی تھے جبکہ انہوں نے بہت سی مزاحیہ کتابیں بھی لکھیں۔

اپنے استاد شعیب ہاشمی کو مشعل راہ سمجھنے والے فاروق قیصر کو 1970 میں پہلی مرتبہ اکڑ بکڑ کے ذریعے پاکستان ٹیلی ویژن پر متعارف کرایا گیا لیکن انہیں اصل شہرت 1976 میں ڈرامہ کلیاں میں اپنے کردار انکل سرگم سے ملی اور وہ راتوں رات شہرت کی بلندیوں پر پہنچ گئے۔

انکل سرگم ایک کٹھ پتلی کردار ہے جسے 1976 میں سرکاری ٹی وی پر نشر ہونے والے پاکستانی بچوں کے ٹی وی شو کلیاں میں پہلی مربتہ متعارف کرایا گیا اور اس کردار کو تخلیق کرنے کے ساتھ ساتھ آواز بھی فاروق قیصر نے اپنی ہی دی تھی۔انکل سرگم اور ماسی مصیبتے کو پاکستان کی افسانی کٹھ پتلی جوڑی سمجھا جاتا ہے جبکہ کلیاں، پتلی تماشا اور سرگم ٹائم فاروق قیصر کے مشہور پروگرام تھے۔

فاروق قیصر کی فنی خدمات کے اعتراف میں 1993 میں صدارتی ایوارڈ سے بھی نوازا گیا تھا جبکہ رواں سال یوم پاکستان پر صدر مملکت عارف نے بھی خدمات کے اعتراف میں انہیں ستارہ امتیاز سے نوازا تھا۔انہوں نے اسکالرشپ پر رومانیہ جا کر بھی تعلیم حاصل کی جبکہ یونیسکو کی جانب سے دو سال بھارت جا کر بھی تعلیمی خدمات انجام دیں۔

صدرڈاکٹرعارف علوی اور وزیراعظم عمران خان نے ممتازفنکاراورادیب سیدفاروق قیصر کے انتقال پرگہرے دکھ اورافسوس کااظہارکیاہے۔صدرنے اپنے پیغام میں کہاکہ سیدفاروق قیصرنے فن کے شعبے میں شاندارخدمات انجام دیں۔انہوں نے کہاکہ فاروق قیصرکوتمغہ امتیازاورتمغہ برائے حسن کارکردگی سے نوازنا حکومت کیلئے ایک بڑااعزازہے۔

وزیراعظم نے اپنے ایک ٹوئیٹ میں کہاکہ فاروق قیصرمحض ایک اداکار ہی نہیں تھے بلکہ انہوں نے سماجی ناانصافی اوردیگرمعاشرتی مسائل کے حوالے سے آگہی پیداکی۔وزیراطلاعات چودھری فوادحسین نے ایک بیان میں افسوس کااظہارکرتے ہوئے کہاکہ سیدفاروق قیصر نے پتلی تماشہ کے قدیم فن میں نئی جہتیں متعارف کرائیں۔

انہوں نے کہاکہ انکل سرگرم کی وفات سے جوخلا پیدا ہواہے وہ برسوں پرنہیں ہوسکے گا۔انہوں نے مرحوم کی روح کے ایصال ثواب کے لئے فاتحہ خوانی کی اورسوگوارخاندان سے تعزیت کی۔ادھروزیرداخلہ شیخ رشیداحمدنے بھی ایک ٹوئیٹ میں عظیم فنکار کے انتقال پرافسوس کااظہارکیا اور کہاکہ سیدفاروق قیصرایک ذہین ادیب اورکارٹونسٹ تھے

مریم نواز کا فاروق قیصر عرف انکل سرگم کے انتقال پر اظہار تعزیت

مسلم لیگ نون کی نائب صدر اور سابق وزیراعظم میاں نواز شریف کی صاحبزادی مریم نواز نے معروف مزاح نگار فاروق قیصر عرف انکل سرگم کے انتقال پر شدید دکھ کا اظہار کیا ہے۔

مریم نواز نے اپنے تصدیق شدہ ٹوئٹر اکاونٹ پر فاروق قیصر کی یادگار تصویر شیئر کرتے ہوئے لکھا کہ مسکراہٹیں پھیلانے پر فاروق قیصرصاحب کو ہمیشہ یاد کیا جائے گا کیونکہ یہ شاید سب سے بڑی خدمت ہے جو آپ اپنے ہم عمر انسانوں کے لیے کرسکتے ہیں۔

انہوں نے فاروق قیصر کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ انکل سرگم جیسی بچپن کی خوبصورت اور ناقابل فراموش یادوں کا شکریہ۔مریم نواز نے فاروق قیصر کے لیے دعائے مغفرت کرتے ہوئے ان کے لواحقین کے لیے بھی دعا کی۔