حریت کانفرنس کی بھارت و کشمیر کی مختلف جیلوں میں تیزی سے پھیلتی ہوئی کورونا وباء پرگہری تشویش


جموں: مقبوضہ جموں و کشمیر میںکل جماعتی حریت کانفرنس نے بھارت اور کشمیر کی مختلف جیلوں میں کورونا وائرس کے بڑھتے ہوئے واقعات پر گہری تشویش ظاہر کرتے ہوئے بھارتی حکومت پر زور دیا ہے کہ وہ جیلوں میں کورونا وبا پھیلنے کے باعث حریت رہنماؤں اور کارکنوں کی زندگیوں کو درپیش شدید خطر ات کے باعث انہیں فوری طورپر رہا کریں،

حریت رہنماء اور سوشل پیس فورم کے چیئرمین ایڈووکیٹ دیویندر سنگھ بہل نے جموں سے جاری ایک بیان میں کہاکہ بھارتی حکومت نے دانستہ طورپر حریت رہنما محمد اشرف صحرائی کو جیل میں علاج معالجے کی سہولیات سے محروم رکھ کر انہیں موت کے منہ میں دھکیل دیا ۔

انہوں نے کہا کہ بھارت کشمیریوںکی اپنے ناقابل تنسیخ حق ،حق خود ارادیت کے حصول کیلئے جاری تحریک آزادی کو دبانے کیلئے تمام اوچھے ہتھکنڈے استعمال کر رہا ہے تاہم انہوں نے کہاکہ بھارت اپنے مذموم عزائم میں ہرگز کامیاب نہیں ہو گا۔ دیویندر سنگھ بہل نے کہا کہ تنازعہ کشمیر عالمی سطح پر تسلیم شدہ مسئلہ ہے اورکشمیری عوام اپنی خواہشات کے مطابق اس دیرینہ تنازعے کے حل تک اپنی پر امن جدوجہد جاری رکھیں گے ۔

انہوں نے کہا کہ کشمیری شہداء کی قربانیوں کو ہرگزرائیگاں نہیں جانے دیا جائے گا اور ایک دن ضرورکشمیری عوام بھارت کے غیر قانونی تسلط سے آزادی حاصل کر لیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ بھارت نے 5اگست 2019ء کو عالمی قوانین کی خلاف ورزی کرتے ہوئے مقبوضہ جموں وکشمیر کی خصوصی حیثیت کو منسوخ کرکے اپنے غیر قانونی قبضے کو مضبوط کرنے کی کوشش کی، جسے کشمیری عوام اور عالمی برادری دونوں نے تسلیم نہیں کیاہے۔

حریت رہنماء نے واضح کیاکہ  جب تک مسئلہ کشمیر کو اقوام متحدہ کی قرار دادوں اور کشمیری عوام کی خواہشات کے مطابق حل نہیں کیاجاتا جنوبی ایشیاء میں پائیدار امن قائم نہیں ہوسکتا۔ انہوں نے بھارت اور مقبوضہ کشمیر میں بڑھتی ہوئی کورونا وائرس کی وباء پر شدید تشویش ظاہر کی۔ انہوں نے عالمی برادری اور حقوق انسانی کی تنظیموں سے اپیل کی کہ وہ بھارت اور مقبوضہ کشمیر کی جیلوں میں نظر بند کشمیریوں کی فوری رہائی کیلئے بھارت پر دباؤ بڑھائیں۔

ادھر ڈیموکریٹک پولٹکل موومنٹ کے جنرل سیکریٹری پیرھلال احمد نے ایک بیان میں مقبوضہ جموں وکشمیر میں حریت قیادت اور ہزاروں کارکنوں کی مسلسل نظربندی پر اظہار افسوس کیا ہے ۔ انہوں نے عالمی برادری پر زور دیا ہے کہ وہ تیزی سے پھیلتی ہوئی کورونا وبا کے دوران بھارت اور کشمیر کی جیلوں میں نظربند حریت رہنماؤں اور کارکنوں کی فوری رہائی کیلئے بھارت پردباؤ بڑھائے۔ انہوں نے کہاکہ کل جماعتی حریت کانفرنس کے سینئررہنماء محمد اشرف صحرائی کی جیل میں حراستی موت بھارت کے چہرے پر ایک بدنما داغ ہے ۔