وزیرخزانہ کی گندم سے متعلق صوبے کو خصوصی ہدایت


اسلام آباد:وزیر خزانہ شوکت ترین نے صوبائی حکومت کو سستے داموں گندم کی فراہمی یقینی بنانے کی ہدایت کردی۔اسلام آباد میں وزیر خزانہ کی زیر صدارت قومی پرائس مانیٹرنگ کمیٹی کا اجلاس ہوا، جس میں وفاقی وزرا، مشیروں، معاونین خصوصی سمیت صوبائی چیف سیکریٹریز و دیگر حکام نے شرکت کی۔

ذرائع کے مطابق دوران اجلاس سیکریٹری خزانہ کی بریفنگ میں ملک میں بڑھتی ہوئی مہنگائی کی وجہ ڈھونڈلی گئی اور بتایا گیا کہ عالمی منڈی میں اشیائے ضروریہ کی قیمتیں بڑھنے سے مہنگائی بڑھی ہے۔

اس موقع پر ملک میں اشیائے ضروریہ کی قیمتوں کے رجحان کا جائزہ لیا گیا، اس دوران آٹا، گھی، چینی، چکن، انڈوں، دالوں اور سبزیوں کی قیمتیں بھی زیر غور آئیں۔سیکریٹری خزانہ نے نیشنل پرائس کمیٹی کو ملک میں موجود مہنگائی کے رجحان پر بریفنگ دی۔دوران اجلاس وزیر فوڈ سیکیورٹی نے اجلاس کو صوبوں اور پاسکو کی طرف سے گندم کی خریداری پر بریفنگ دی۔

وزیر خزانہ شوکت ترین نے اس موقع پر صوبائی حکومتوں کو ہدایت کی کہ وہ سستے داموں پر گندم کی فراہمی کو یقینی بنائیں۔اجلاس کے شرکا کو بریفنگ کے دوران بتایا گیا کہ عالمی منڈی میں اشیائے ضروریہ کی قیمتیں بڑھنے سیمہنگائی بڑھی ہے۔بریفنگ میں یہ بھی کہا گیا کہ کورونا وبا کے باعث اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں تیزی سے اضافہ ہوا،

اپریل 2020 سے اپریل 2021 کے ایک سال میں خام تیل 178 فیصد مہنگا ہوا۔بریفنگ میں کہا گیا کہ عالمی منڈی میں چینی کی قیمت ایک سال میں 57 فیصد بڑھی جبکہ پام آئل، سویا بین تیل، گندم کی قیمتوں میں بھی تیزی کا رجحان نمایاں ہے۔