بھارت میں کورونا سے پہلے غیر ملکی تنزانیہ کے سفارتکارکا انتقال


نئی دہلی(صباح نیوز)بھارت میں کورونا وائرس سے تنزانیہ کا سفارتکار انتقال کرگیا۔ بھارتی میڈیا کے مطابق تنزایہ کے سفارت کار کی کورونا وائرس سے موت بھارت میں وبا کے دوران کسی بھی غیر ملکی سفارتکار کی پہلی ہلاکت ہے۔

تنزانیہ کے ہائی کمیشن نے اپنے سفارتکار کی موت کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ بھارت میں تنزانیہ کے ڈیفنس ایڈوائزر کرنل ڈاکٹر موسیس 28اپریل کو کورونا وائرس سے انتقال کرگئے۔ تنزانیہ کے ہائی کمیشن کی جانب سے جاری بیان میں بتایا گیا ہے کہ ڈاکٹر موسیس نئی دہلی کے اسپتال میں زیر علاج تھے۔

بھارت میں تنزانیہ کے سفارتکار کی کورونا سے ہلاکت ایسے وقت میں ہوئی ہے جب بھارت میں گزشتہ ایک ہفتے سے کورونا کے ریکارڈ کیسز رپورٹ ہورہے ہیں جن کی یومیہ تعداد 4لاکھ سے بھی تجاوز کرگئی ہے جبکہ بھارتی دارالحکومت نئی دہلی بھی کورونا سے بری طرح متاثر ہے۔ نئی دہلی میں موجود کئی غیر ملکی سفارتکار اب تک کورونا وائرس میں مبتلا ہوچکے ہیں

جب کہ گزشتہ روز نیوزی لینڈ اور فلپائن کے مشنز نے بھی انڈین یوتھ کانگریس سے آکسیجن کی مدد طلب کی تھی۔ بھارتی وزارت خارجہ نے اعلان کیا تھا کہ بھارت کی طرف سے ملک میں موجود سفارتی عملے کو ضروری طبی معاونت فراہم کی جارہی ہے۔اس کے علاوہ بعض ممالک نے بھارت میں صورتحال کو دیکھتے ہوئے اپنے سفارتی عملے کو نکالنا شروع کردیا ہے جس سلسلے میں تھائی لینڈ کی حکومت نے گزشتہ ہفتے ائیرایمبولینس کے ذریعے اپنے سفارتی عملے کو واپس بلوایا۔