مر کزی تنظیم تا جران پاکستان کے صدر کاشف چوہدری کا احتجاجی مظاہرے سے خطاب


اسلام آباد: مر کزی تنظیم تا جران پاکستان کے صدر محمد کاشف چوہدری نے ملک بھر کی تا جر برادری کی جانب سے تحفظ ناموس رسالت کے لیے ملک گیر کامیاب شٹر ڈاﺅن ہڑتال پر تاجر برادری کا شکر یہ اداد کر تے ہو ئے کہا ہے کہ عشق مصطفی اور ناموس رسالت کیلئے کاروبار تو کیا جان بھی قربان کر نے سے دریغ نہیں کر یں گے ،نبی رحمت ﷺکی ہستی تمام مسلمانوں کے لیے ان کی جان مال، والدین، اولاد سے زیادہ عزیز ہے ان کی شان میں گستاخی کسی صورت قبول نہیں،تاجر برادری نے پرامن شٹر ڈاﺅن ہڑتال کر کے محبت رسول کے جذبے کا عملی اظہار کیا۔

انھوں نے کہا فرانس کے سفیر کی حکومتی معاہدہ کے مطابق ملک بدری کا مطالبہ کرنے والوں کو سیدھی گولیاں مار کر زخمی اورشہید کرنا ریاستی دہشت گر دی کی بد ترین مثال ہے ،ایف اے ٹی ایف کی پاسداری کے لیے حکومت اس حد تک نہ جائے کہ اپنے ہی لوگوں قتل کیا جا رہا ہے ۔ ان خیالات کا اظہار انھوں نے اسلام آباد میں منعقدہ احتجاجی مظاہرے سے خطاب کر تے ہو ئے کیا ، اس موقع پر انجمن تاجران پاکستان کے صدر اجمل بلوچ ، اسلام آبادچیمبر آف کامرس کے صدر ملک ظہیر ، خورشید قریشی ، شعیب عباسی ، چوہدری جاوید اختر ، راجہ ضیاءاحمد نے بھی خطاب کیا ۔

محمد کاشف چوہدری نے کہا معاہدہ پر عملدرآمد نہ کرنے کے بعد پیدا ہونے حالات اور جانی ومالی نقصانات کے معاملہ کی عدالتی تحقیقات کی جا ئے ، لاہور میں پیدا شدہ صورتحال لال مسجد کے واقعہ سے مماثلت رکھتی ہے،حکومت اپنے وعدوں کی پاسداری کرے اور مسلمانان پاکستان کے جذبات کو ٹھیس نہ پہنچائے۔

محمد کاشف چوہدری نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ مظاہروں کے دوران گرفتار ہونے والے بےگناہ افراد کو فی الفور رھا کیا جائے،ملک میں پرامن سر گر میاں کر نے والی کسی پارٹی کو کالعدم قرار دینے کا کام سیاسی حکومت کا نہیں بلکہ الیکشن کمیشن یا عدالت کا ہے، اہل مغرب کا بار بار مسلمانوں کے مرکز محبت پر حملہ دنیا بھر میں شدت پسندی اور اشتعال پھیلانے کا سبب بنا رہا ہے انھوں نے کہافرانس میں تو اس عمل کو سرکاری سرپرستی حاصل ہے، حکو مت تحریک لبیک کے ساتھ معاملات کو افہام تفہیم اور مذاکرات سے حل کرے ۔