بھارتی فوجی سحری اور افطاری کے وقت تلاشی مہم شروع کرتے ہیں


 سری نگر:مقبوضہ کشمیر میں رمضان المبارک میں بھی بھارتی فوجی کارروائیاں جاری ہیں ۔ بھارتی فوجی سحری اور افطاری کے وقت  شہریوں کے گھروں میں گھس کر انہیں تشدد کا نشانہ بنا تے ہیں۔ بھارتی فوج نے گزشتہ روز شمالی کشمیر کے سوپور قصبے اور جنوبی کشمیر کے شوپیاں ضلع کے  کئی دیہات کا  محا صرہ کیا اس دوران رات کو  فوجی اہلکاروں نے  تلاشی کارروائی شروع کی ۔

کے پی آئی  کے مطابق ہڈی گام شوپیان اور الشی پورہ شوپیان میں بھارتی فوج کی  44آر آر اور سی آر پی ایف 178بٹالین سی آر پی ایف کیساتھ مشترکہ کارروائی کے دوران کئی گھنٹوں تک تلاشیاں لیں۔فورسز نے افطاری  کے وقت گھروں میں گھس کر لوگوں کو مارا پیٹا۔ادھرسوپور میں بھی تلاشی مہم  جاری رہی ۔

مقبوضہ کشمیرمیں قابض فوج کے ایک اوراہلکار نے خودکشی کرلی

بھارتی فوجی کریک ڈاون  کے دوران ایک سوچے سمجھے منصوبے کے تحت حریت پسند کشمیریوں کو خوفزدہ کرنے کے لئے شیر خوار بچوں اور نوعمر لڑکوں سے لے کر 80 سال کے بزرگ مردوں اور خواتین تک کو نشانہ بنا رہے ہیں۔سوشل میڈیا پر  ایک تازہ ویڈیو بھی گردش کر رہی ہے جس میں بندوقوں سے لیس ظالم بھارتی فوجی مقبوضہ کشمیر میں ایک ماں سے اس کا بچہ چھین رہے ہیں اور مظلوم ماں چیخ وپکار کے سوا کچھ نہیں کرپارہی ہے۔