سابق وفاقی وزیر سرتاج عزیزکے ذاتی ڈرائیور حبیب خان اسلام آباد سےلاپتہ

فائل فوٹو

اسلام آباد:سابق وفاقی وزیر سرتاج عزیزکے ذاتی ڈرائیور 50سالہ حبیب خان وفاقی دارالحکومت اسلام آباد سےلاپتہ ہوگئے، مقدمہ درج کرلیا گیا۔

شہری کے لاپتہ ہونے کا واقعہ 12 اپریل کوتھانہ بنی گالہ کی حدود میں رونما ہوا ہے۔

لاپتہ شہری کے برادر نسبتی ابرار احمد خان سکنہ لکھوال بنی گالہ اسلام آباد کی طرف سے پولیس کو درخواست دی گئی ہے جس میں انہوں نے موقف اپنایا ہے کہ  حبیب خان 12 اپریل کو گھر سے 9بجے چک شہزاد سکیم ایریا میں سرتاج عزیز کے فارم ہاوس پر ڈیوٹی کرنے گیا جو تاحال گھرواپس نہیں آیا۔

درخواست کے متن میں کہا گیا ہے کہ میرے بہنوئی کی گمشدگی رپورٹ درج کرکے بازیاب کرایا جائے۔درخواست گزار ابرار خان نے درخواست میں کہا ہے کہ لاپتہ ہونے سے کچھ روز قبل میرے بہنوئی حبیب خان اپنی ڈیوٹی سے واپس گھر آرہے تھے کہ بنی گالا تھانہ کی حدود میں کچھ لوگوں نے انہوں روک کر تشدد کا نشانہ بنایا اور ان سے ٹیلی فون اور جیب میں موجود نقدی چھین لی تھی جس پر تھانہ بنی گالا پولیس نے ابتدائی کارروائی بھی کی تھی۔

درخواست میں کہا گیا ہے کہ حبیب خان گیارہ اپریل کو ڈیوٹی پر گئے تو دن بھر ایک سیاہ رنگ کی کار مختلف جگہوں پر ان کا تعاقب کرتی رہی اور جب وہ شام کو گھر پہنچے تو انہیں ایک خفیہ نمبر سے کال موصول ہوئی اور انہیں دھمکیاں دی گئیں ۔ اگلے ہی روز جب وہ ڈیوٹی پر گئے تو گھر واپس نہ آئے ۔

تھانہ بنی گالہ میں پولیس کی طرف سے واقعہ کا مقدمہ نمبر86/21درج کرلیا گیا ہے۔

حبیب خان کے خاندان بھر میں ان کی گمشدگی پر شدید توشویش پائی جاتی ہے ، انکے اہل خانہ نے وزیراعظم عمران خان جو ان کے پڑوسی بھی ہیں ، وفاقی وزیرداخلہ شیخ رشید احمد اور متعلقہ پولیس حکام سے حبیب خان کی بازیابی کی اپیل کی ہے ۔