ٹی20ورلڈ کپ پاکستان کابھارت میں کھیلنے کیلئے تحریری یقین دہانی کا مطالبہ


 کراچی: پاکستان نے ٹی20ورلڈکپ میں شرکت کیلئے بھارت سے ویزوں کیلئے تحریری یقین دہانی مانگ لی.

کراچی میں چیف ایگزیکٹو پی سی بی وسیم خان اور ڈائریکٹر نیشنل ہائی پرفارمنس سینٹر ندیم خان کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے چیئرمین پی سی بی احسان مانی نے کہا اگر31مارچ تک بھارت نے یقین دہانی نہ کرائی  تو آئی سی سی سے ٹورنامنٹ  یواے  ای منتقل کرنے کی درخواست کریں گے۔ اگر ٹی 20ورلڈ کپ بھارت میں نہیں ہوا تو یو اے ای میں ہوگا اور اس کے متعلق 31مارچ سے پہلے فیصلہ متوقع ہے۔

انہوں نے بتایا کہ بھارت کے ساتھ ویزا اور کورونا کا بھی مسئلہ ہے۔ احسان مانی نے کہا آئی سی سی کو بھارت میں کھیلنے کیلئے کھلاڑیوں، صحافیوں اورفینزکے ویزا سے متعلق یقین دہانی کرانی ہوگی۔ان کا کہنا تھا کہ ورلڈکپ بھارت میں ہونا ہے اس لیے بھارت ورلڈ کپ میں پاکستان سے مکمل تعاون کرے گا، بھارت اگر پاکستانی اسکواڈ کو ویزے اور مکمل سکیورٹی نہیں دے سکتا تو ایونٹ کی میزبانی کسی دوسرے ملک کو دینے پر زور دیا جائے گا۔

ان کا کہنا تھا کہ اگر آئی سی سی نے یقین دہانی نہ کرائی تو میچز دوسری جگہ کروانیکا مطالبہ کریں گے۔۔ایشیا کپ کے متعلق چیئرمین پی سی بی کا کہنا تھا کہ گزشتہ سال کی طرح اس سال بھی ناممکن دکھائی دے رہا ہے،ی لنکا نے جون میں میزبانی کا کہا تھا لیکن اب تاریخوں کا کلیش آ رہا ہے، جون میں آئی سی سی ٹیسٹ چیمپئن شپ کا فائنل ہے، لگتا ہے کہ ایشیا کپ 2023 تک ملتوی کرنا پڑے گا۔

انہوں نے بتایا کہ جلد پاکستانی ٹیم جنوبی افریقہ اور زمبابوے کا دورہ کرے گی ڈائریکٹر ہائی پرفارمنس سینٹر ندیم خان کا اس موقع پر کہنا تھا کہ سٹی کرکٹ کے ٹرائل کا سلسلہ جلد شروع ہونے والا ہے، سٹی کرکٹ کی 90 سے زائد ٹیمیں بنیں گی۔

پریس کانفرنس کے دوران ایک سوال کے جواب میں چیف ایگزیکٹو پی سی بی وسیم خان کا کہنا تھا کہ محمد حفیظ کو ان کی کارکردگی پر کنٹریکٹ دینے کی پیشکش کی، حفیظ نے انکار کیا یہ ان کا ذاتی فیصلہ تھا،خیال رہے کہ پاکستان اور بھارت آخری بار2019 میں آمنے سامنے آئے تھے۔  کرکٹ ورلڈکپ2019 میں دنوں حریف  مانچسٹر کے میدان میں ایک دوسرے کے خلاف اترے تھے