قطر کا غزہ میں بجلی بحران کے حل کیلئے 60 ملین ڈالردینے کااعلان


دوحا:قطر نے غزہ کی پٹی میں بجلی بحران کے حل کیلئے 60 ملین ڈالر کی رقم فراہم کرنے کا اعلان کردیا۔ فلسطین میں قطر کے سفیر اور غزہ میں تعمیر نو اور بحالی کمیٹی کے سربراہ محمد العمادی نے بتایا کہ قطری حکومت نے غزہ کی پٹی کو بجلی کے بحران سے نکالنے اور غزہ میں گیس اور بجلی کی ضروریات پوری کرنے میں مدد فراہم کرنے کا منصوبہ تیار کیا ہے۔

ویڈیو کانفرنس کے ذریعہ اس میٹنگ کے دوران العمادی نے وزیر اعظم محمد اشتیہ اور فلسطین میں یوروپی یونین کے نمائندے مسٹر سوین کون وان برگ سڈورف کے ساتھ تبادلہ خیال کیا۔ غزہ میں واحد پاور پلانٹ مائع ایندھن کے بجائے گیس پر کام کرے گا۔

قطری سفیر نے تصدیق کی کہ ان کا ملک اسرائیلی وجود کے اندر سے گیس پائپ لائنوں کو بڑھانے کے لیے 60 ملین ڈالر مختص کرے گا جبکہ یورپی یونین نے غزہ کی پٹی میں توسیع مکمل کرنے کے لیے 20 ملین یورو فراہم کرنے کا وعدہ کیامحمد اشتیہ نے غزہ کی پٹی میں بجلی گھر کی فراہمی کے لیے اسرائیل کے ذریعہ گیس کی ترسیل کی اہمیت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ اس منصوبے کی تکمیل کے لیے قطری اور یورپی تعاون قابل تحسین ہے۔ انہوں نے کہا کہ قطر اور دوسرے ممالک کے تعاون سے غزہ کی پٹی کو بجلی کے بحران کے حل میں مدد ملے گی۔