فیاض الحسن چوہان نے حلقہ انتخاب کے عوام سے بے وفائی کی مثال قائم کر دی


راولپنڈی:تبدیلی سرکاری کے صوبائی وزیرپنجاب فیاض الحسن چوہان نے اپنے حلقہ انتخاب کے عوام سے بدعہدی اور بے وفائی کی مثال قائم کر دی۔ محلہ رسول نگر صادق آباد کے دیرینہ مسائل حل کرنے کے بجائے مسائل زدہ محلے کو خیر آباد کہہ کر پوش علاقے میں منتقل ہو گئے۔

تفصیلات کے مطابق پی ٹی آئی حکومت کے صوبائی وزیر فیاض الحسن چوہان اڑھائی سال گزرنے کے باوجوداپنے حلقہ انتخاب کے محلہ رسول نگر کے عوام سے کئے گئے وعدے پورے نہ کر سکے، صوبائی وزیر فیاض الحسن چوہان کا ذاتی گھر بھی اسے محلے میں واقع تھا، حکومت میں آنے کے بعد جسے وہ فروخت کر کے پوش علاقے آفندی کالونی میں منتقل ہو گئے ہیں، محلہ رسول نگر کا بڑا مسئلہ برساتی نالے پر تجاوزات ہیں جسکے باعث برسات کے موسم میں محلہ رسول نگر کی متعدد گلیاں پانی سے بھر جاتی ہیں اور یہ گندہ پانی سینکڑوں گھروں میں داخل ہو کر لوگوں کے قیمتی سازو سامان اور گاڑیوں کو شدید نقصان پہنچاتا ہے۔

فیاض الحسن چوہان نے الیکشن کے دوران محلہ رسول نگر کے رہائشیوں سے وعدہ کیا تھا کہ وہ جیت کر برساتی نالے کا دیرینہ مسئلہ حل کردینگے۔ کچھ عرصہ قبل کنٹونمنٹ بورڈ نے مذکورہ نالے سے تجاوزات ہٹانے کی تحریک کی تھی مگر با اثر اور مالدار قبضہ مافیا نے مال پانی خرچ کیا جسکے بعد صوبائی وزیر نے مبینہ طور پر تجاوزات کے خلاف آپریشن سے توبہ کر لی۔ یہاں یہ امر قابل ذکر ہے کہ صوبائی وزیر نے محلہ رسول نگر میں لوگوں کے روز مرہ استعمال کیلئے 65لاکھ روپے کی لاگت سے ایک ٹیوب ویل نصب کرایا ،

ٹیوب ویل منصوبے کو مکمل ہوئے 6ماہ سے زائد عرصہ گزر چکا ہے مگر ابھی تک اسکا پانی صاف نہیں ہو سکا۔ محلہ رسول نگر میں ہی مرمت اور تیار ہونے والی گلیوں کے کام میں انتہائی غیر معیاری میٹریل کا استعمال کیا گیا جسکے نتیجہ میں گلیاں دوبارہ ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہیں ۔محلہ رسول نگر کے رہائشیوں نے کہاکہ صوبائی وزیر فیاض الحسن چوہان محلہ رسول نگر کے مسائل حل اور حالات تبدیل تو نہیں کر سکے تاہم محلے میں واقع اپنا ذاتی گھر فروخت کر کے اڑھائی کروڑ روپے مالیت کی کوٹھی خرید کرآفندی آفیسر کالونی میں شفٹ ہو گئے ہیں۔