کمیشن اجلاس میں شرکت نہ کر کے این سی نے اچھا نہیں کیا: غلام نبی آزاد


سرینگر:مقبوضہ کشمیرکے سابق وزیر اعلی اور کانگریس کے سینئر لیڈرغلام نبی آزاد نے حد بندی کمیشن اجلاس میں نیشنل کانفرنس اراکین پارلیمنٹ کی عدم شرکت پر کہا  ہے کہ یہ اچھی بات نہیں ہے کہ ممبران پارلیمنٹ نے میٹنگ میںحصہ نہیں لیا۔

اپنے بیان میں آزاد نے کہا کہ نیشنل کانفرنس ممبران پارلیمنٹ کو حد بندی سے متعلق منعقدہ میٹنگ میں حصہ لینا چاہئے تھا لیکن انہوں نے اس کا بائیکاٹ کیا جو  “اچھی بات” نہیں ہے۔انہوں نے کہا کہ نیشنل کانفرنس کے پاس اکثریت ہے کیونکہ انکے تینوں ممبران پارلیمنٹ  حدبندی کمیشن کے ممبر مقرر کئے گئے ہیں اور ان کی شرکت سے ہمارا معاملہ بہت زیادہ  مضبوط ہوجاتا تاہم انہوں نے حد بندی کمیشن میٹنگ کا بائیکاٹ کرکے بی جے پی کو آزادانہ طور فیصلہ کرنے کا اختیار دیا۔

مزید پڑھیں: مقبوضہ کشمیر:حریت کانفرنس کا  نریندرامودی کے دورے پر مکمل ہڑتال کی اپیل کا اعادہ

سابق وزیر اعلی نے کہا کہ میٹنگ میں شرکت کرکے وہ اپنے خیالات اور دلائل کو مضبوطی سے پیش کرسکتے تھے کیونکہ ان کی اکثریت ہے۔انہوں نے کہا کہڈاکٹر فاروق جیسے سینئر رہنما جو حد بندی کمیشن کے ممبر بھی ہیں اجلاس میں شریک ہوکر ہمارے معاملے کو مضبوط بنادیتے۔ غلام نبی آزاد نے کہا کہ یہ سمجھ نہیں آرہا ہے کہ نیشنل کانفرنس ممبران اجلاس سے کیوں دور رہے اور اس میٹنگ میں حصہ نہ لیتے ہوئے انہوں نے بی جے پی کو “فری ہینڈ” دے دیا جو کہ اچھی بات نہیں ہے