پی ڈی ایم اورپی ٹی آئی کی طرزسیاست میں کوئی فرق نہیں،لیاقت بلوچ


لاہور:نائب امیر جماعت اسلامی پاکستان لیاقت بلوچ نے کہاہے کہ پی ڈی ایم اور پی ٹی آئی کی طرز سیاست میں کوئی فرق نہیں ۔ آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع کا معاملہ ہو یا سینیٹ میں ان ہائوس تبدیلی کا معاملہ ، جب اوپر سے دبائو آتاہے تو یہ لیٹ جاتے ہیں ۔ آج اگر حکومت ناکام و نااہل ہے تو عمران خان نے خود کہاہے کہ ان کی کوئی تیاری نہیں تھی ۔ پی ڈی ایم میں شامل جماعتوں کے قائدین بھی آزمودہ ہیں جنہوں نے بڑے بڑے بیانیے کے ساتھ دعوے کیے لیکن ان کے بیانیوں میں بھی روزانہ کی بنیاد پر تبدیلیاں ہورہی ہیں جس سے تاثر جارہاہے کہ ان کی بھی کوئی تیاری نہیں ۔

ان خیالات کا اظہار انہوںنے منصورہ میں کارکنان کی تربیتی ورکشاپ سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔لیاقت بلوچ نے کہاکہ فارن فنڈنگ کیس میں جن سیاسی جماعتوں کے الیکشن کمیشن میں معاملات چل رہے ہیں، وہ وہاں اپنی صفائی دینے کی بجائے نئے نئے پینترے بدل رہے ہیں ۔انہوں نے کہاکہ ملک کی سیاست بے توقیر ، جمہوریت پر خطرات ، پارلیمنٹ مفلوج ، قانون سازی آئی ایم ایف ، ایف اے ٹی ایف کے دبائو پر ہورہی ہے جس سے ملک کو ناقابل تلافی نقصان پہنچ رہاہے ۔ عام آدمی کی فلاح و بہبود کے لیے اس حکومت نے ٹکے کا کام نہیں کیا ۔

انہوں نے کہاکہ پی ٹی آئی حکومت میں سٹیل ملز کے ہزاروں مزدوروں کا معاشی قتل کردیا گیا ۔ پی آئی اے کے طیارے کی ملائشیامیں ضبطگی نااہلی کا ثمر ہے ۔تین سال کی مدت پوری ہونے کو ہے ، حکومت اپنی آئینی مدت پوری کرنے کو ہے ،اگر حکومت اپنی آئینی مدت پوری بھی کر لے تو اس نے ایسا کوئی بیج نہیں بویا جس کے اچھے نتائج سامنے آسکیں ۔