بھارت کو بڑی سفارتی شکست، سلامتی کونسل کی دو اہم کمیٹیوں کی سربراہی نہ مل سکی


اسلام آباد:بھارت اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی دو اہم ترین کمیٹیوں کی سربراہی نہ مل سکی، کمیٹی رکن ممالک نے بھارت پر عدم اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ بھارت ان کمیٹیوں کو پاکستان کے خلاف اپنے گھنائونے مقاصد کے لیے استعمال کرسکتا ہے۔ بھارت القاعدہ، داعش پر پابندیوں، افغان امور، ایٹمی عدم پھیلائو سے متعلق سلامتی کونسل کی کمیٹی نمبر 1267اور 1540 کاسربراہ بننا چاہتا تھا تاہم رکن ممالک نے بھارت کی ایک نہ چلنے دی اوربھارت سلامتی کونسل کے 15 ارکان کی حمایت لینے میں ناکام رہا۔

مزید پڑھیں: پاکستان نے یو این لسٹ میں موجود شخص کے حوالے سے عدالتی فیصلے پربھارتی ردعمل مسترد کردیا

دونوں کمیٹیوں کے رکن ممالک کا کہنا تھا کہ بھارت کمیٹی کو اپنے مکروہ عزائم کے لیے استعمال کرسکتا تھا، بھارت یہ عہدہ حاصل کرکے پاکستان کے خلاف اپنے منفی ایجنڈے کو بڑھانا چاہتا ہے، بھارت ایٹمی عدم پھیلائو سے متعلق کمیٹی کی چیئرمین شپ کے لیے مناسب ملک نہیں۔ارکان کا موقف تھا کہ بھارت کے سربراہ بننے سے افغان امن عمل پر منفی اثرات پڑ سکتے ہیں، حال ہی میں پاکستان نے ٹی ٹی پی اور جماعت الحرار کو بھارتی فنڈنگ کے حوالے سے بھی آگاہ کیا تھا۔